روزانہ 40 سگریٹ پینے والا دو سالہ بچہ


سیگریٹ نوشی مضر صحت ہے تاہم اکثر لوگ اپنی صحت کی پروای کئے بغیر سگیرٹ پینے سے باز نہیں آتے اور یہ لت کم عمری خصوصاََ بچوں کو بھی لگ رہی ہے۔



انڈونیشیا میں ایک دو سالہ بچہ نہ صرف اس لت میں مبتلا ہے بلکہ روزانہ چالیس کے قریب سگریٹ پی لیتا ہے۔ دو سالہ ’راپی پامونگ کاس‘نامی بچے نے سگریٹ نوشی کا آغازسڑک پر گرے ٹوٹوں کو اُٹھا کرکر کیا جس کے وہاں سے گزرتے لوگوں نے بھی بچے کو سگریٹ لگانے میں مدد کی اور اب وہ سگریٹ کا اس قدر عادی ہوگیا ہے کہ سگریٹ پیئے بغیر رہ نہیں پاتا۔



بچے کی والدہ مریاتی کہتی ہیں کہ ان کا بچہ روزانہ دو پیکٹ سگریٹ پھونک دیتا ہے اور اگر اسے سگریٹ نہ دی جائے تو وہ بہت شور مچاتا اور جھگڑتا ہے۔ بچے کی عادت دو ماہ سے عروج پر پہنچ گئی ہے اور اب وہ اگر سگریٹ نہ پیے تو اسے نیند نہیں آتی۔ اب حال یہ ہے کہ سگریٹ کے بغیر نہیں رہ سکتا اور دن بھر میں 40 کے قریب سگریٹ پی جاتا ہے۔


Post a Comment

0 Comments