مکڑی کا گھر اور انسان


اسلام علیکم ورحمتہ اللہ وبراکاتہ

:فضیلت درود پاک


اِنَّ اللّٰهَ وَ مَلٰٓىٕكَتَهٗ یُصَلُّوْنَ عَلَى النَّبِیِّؕ-یٰۤاَیُّهَا الَّذِیْنَ اٰمَنُوْا صَلُّوْا عَلَیْهِ وَ سَلِّمُوْا تَسْلِیْمًا

بیشک اللہ اور اس کے فرشتے نبی پر درود بھیجتے ہیں ۔ اے ایمان والو!ان پر درود اور خوب سلام بھیجو۔


سورہ احزاب۔ آیت نمبر 56۔ ترجمہ کنزالعرفان 

۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
درود ابراہیمی
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

اس لیے آپ بھی ایک بار درود پاک پڑھ لیجیے

اللَّهُمَّ صَلِّ عَلَى مُحَمَّدٍ، وَعَلَى آلِ مُحَمَّدٍ، كَمَا صَلَّيْتَ عَلَى إِبْرَاهِيمَ وَعَلَى آلِ إِبْرَاهِيمَ، إِنَّكَ حَمِيدٌ مَجِيدٌ

اللَّهُمَّ بَارِكْ عَلَى مُحَمَّدٍ، وَعَلَى آلِ مُحَمَّدٍ، كَمَا بَارَكْتَ عَلَى إِبْرَاهِيمَ، وَعَلَى آلِ إِبْرَاهِيمَ، إِنَّكَ حَمِيدٌ مَجِيدٌ


۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔
جمعہ اسپیشل
۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔


مکڑی کا گھر اور انسان

مکڑی کا گھر سب سے کمزور گھر ہوتا ہے۔ اس کی مثل قرآن میں بھی دی گئی ہے۔ اگر غور کیا جاۓ تو واقعی ایسا ہی ہے۔

نر اور مادہ اکٹھے رہتے ہیں۔جب مادہ کے ہاں بچے جنم لیتے ہیں تو وہ اپنے نر کو مار دیتی ہے۔ جب بچے پل جاتے ہیں تو وہ ماں کو مار کر گھر سے نکال دیتے ہیں۔ 

یہ ان کی فطرت ہے کہ ان کے دل تنگ ہیں۔ جب ایک دوسرے کی ضرورت محسوس نہیں کرتے تو مار دیتے ہیں۔ 

دنیا کی مثال بھی ایسی ہی ہے۔پھر ہمارے گھروں میں انا کا راج ہے۔ایک دوسرے کے یوں دل توڑے جاتے ہیں کہ ایک دوسرے کو کہ دیا جاتا ہے کہ میں تمھارے لیے اور تم میرے لیے مر گئے۔ 

ہم انسانوں کو تو محبت و خلوص اور دل میں وسعت پیدا کرنی چاہیے۔ اتنا دل چھوٹا نہیں کرنا چاہیے کہ دوسرے کے لیے جگہ ہی نہ ہو۔

Post a Comment

0 Comments